کوئٹہ میں مشتعل ہجوم کے ہاتھوں نوجوان ہلاک دو شدید زخمی

تینوں افراد پر خواتین کی مبینہ ویڈیوز بنانے کے قابل اعتراض دھندے میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا جا رہا ہے

پاکستان کے سب سے پسماندہ اور باغیوں کے  ٹیررازم کا شکار صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں مشتعل افراد نے خواتین کی مبینہ ویڈیوز بنانے کے الزام میں  ہیئر سیلون کی دکان میں موجود تین نوجوانوں کو بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا ۔ جس کے نتیجے میں ایک نوجوان کی موقع پر ہلاکت  جبکہ دو افراد شدید زخمی ہو گئے۔
اس مذموم واقعہ کا افسوس ناک پہلو یہ بھی ہے کہ اس موقع پر   موجود پولیس  اہلکار خاموش تماشائی بن کر موت کا یہ سارا کھیل دیکھتے رہے۔  گورنر بلوچستان کے حکم پر صوبہ کے اعلی  حکام نے  پانچ پولیس اہلکاروں کو اپنے فرائض سے غفلت برتنے پر معطل کر دیا ہے۔  جبکہ  واقعہ میں ملوث متعدد افراد کو گرفتار کر کے ان کیخلاف مقدمہ درج کر لیا  گیا ہے۔ واقع کی ابتدائی تحقیقات کے مطابق ان تینوں لڑکوں کا تعلق کوئٹہ کے  ایک اور علاقے سے تھا۔ ۔
ہفتہ کے روز اس واقعہ میں ہلاک اور زخمی ہونے والے نوجوانوں  کے اہل خانہ اور عزیز و اقارب نے  ہلاک ہونے  والے لڑکے کے جنازے کے ساتھ  کوئٹہ میں گورنر ہاؤس کے  سامنے سینہ کونی اور شدید احتجاج بھی کیا۔ مابعد انتظامیہ کی طرف سے ملزموں کیخلاف قانونی کاروائی کی یقین دہانی کے بعد ہجم منتشر ہو گیا۔
 
وزیرِ اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان عالیانی نے ٹویٹ اور پریس  سٹیٹمنٹ جاری کرتے ہوئے  کہا  ہے کہ  واقعہ کی ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے۔ جبکہ اس حوالے سے نامزد افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کی  ہائی لیول  تحقیقات کی جا رہی ہیں ۔ قانون کو ہاتھ میں لینے کا اختیار کسی کو نہیں لہذا شفاف تحقیقات کے بعد مجرموں کو قانون کے مطابق قرار  واقعی سزا دی جائے گی۔
فاروق رشید بٹ
عالمی امن اور اتحاد اسلامی کا پیام بر ، نام فاروق رشید بٹ اور تخلص درویش ہے، سابقہ بینکر ، کالم نویس ، شاعر اور ورڈپریس ویب ماسٹر ہوں ۔ آج کل ہوٹل مینجمنٹ کے پیشہ سے منسلک ہوں ۔۔۔۔۔

تازہ ترین خبریں

کورونا بحران کے باعث ٹی 20 ورلڈ کپ ملتوی کر دیا گیا

انرنیشنل کرکٹ کونسل کی طرف سے یہ حتمی بیان سامنے آ...

ایران میں حکومت کے مخالف صحافیوں کو سخت سزاؤں کا سلسلہ جاری ہے

مغربی اور امریکی میڈیا کے مطابق ایرانی سرکاری عدالت نے وائس...

Comments

Leave a Reply

تازہ ترین خبریں