سکم بارڈر پر بھارتی اور چینی فوج میں دست بدست لڑائی

اطلاعات کے مطابق دونوں فورسز کی طرف سے جارحانہ ہاتھا پائی اور آزادانہ مکوں  کے ساتھ ساتھ ایک دوسرے پر شدید پتھراؤ  کیا گیا

بھارتی اور ورلڈ پریس کی خبروں کے مطابق گذشتہ روز کم از کم 15 سے 20 ہندوستانی اور چینی فوجیوں کے مابین ہاتھا پائی اور  پتھراؤ کی جھڑپ ہوئی۔ یہ واقعہ 16 ہزار فٹ سے زیادہ کی بلندی پر شمالی سکم بارڈر پر پیش آیا ۔ اطلاعات کے مطابق دونوں فورسز کی طرف سے ہاتھا پائی  اور مکوں  کے ساتھ ساتھ ایک دوسرے پر شدید پتھراؤ  کیا گیا۔ یاد رہے کہ خطے میں متنازعہ لائن آف ایکچول کنٹرول کے بارے میں  ہندوستان اور چین کے درمیان شدید اختلافات ہیں۔
 
یہ سارا واقعہ بھارتی فوج کے سپاہیوں نے ویڈیو پر ریکارڈ کرلیا ہے۔ بھارتی   فوج کے ترجمان نے کہا ہے، ” دونوں فریقوں کے فوجیوں کی طرف سے ایک دوسرے کے ساتھ جارحانہ سلوک کے نتیجے میں کئی فوجیوں کو  چوٹیں آئیں۔ لیکن مقامی سطح پر بات چیت کے بعد دونوں فریقین کے مابین تناؤ کم ہو گیا”۔
 
سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ “سرحدوں پر محافظ فوجیوں کے درمیان عارضی اور تھوڑی دیر کیلئے تناؤ ہوتا رہتا ہے کیونکہ سرحدوں کے حدود حل نہیں ہوتے ہیں۔ آرٹیکل میں کہا گیا ہے کہ دونوں فوجوں کی سپاہیوں کے آمنے سامنے ہونے کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں۔ اور فوجی دستے اس طرح کے معاملات کو باضابطہ طور پر طے شدہ معاہدوں اور فوجی پروٹوکول کے مطابق حل کرتے ہیں۔
 
آخری بار جب ایسا ہی کچھ ہوا اگست 2017 میں ہوا تھا ۔ جس میں لداخ میں پینگونگ جھیل کے مشرقی کنارے پر ہندوستانی اور چینی فوجی مارے گئے۔ اسی سال چین کے ساتھ 73 روزہ تعطل بھی ڈوکلام مرتفع پر ہوا ، جس کا دعویٰ چین اور بھارت کے اتحادی بھوٹان نے کیا۔
 
 گذشتہ برسوں 2018 میں وزیراعظم نریندر مودی اور چینی صدر شی جنپنگ کے مابین ووہان میں غیر رسمی سربراہی اجلاس میں ، ڈوکلام سے آگے بڑھنے اور سرحدی علاقوں پر “امن و سکون برقرار رکھنے” کے حصے کے طور پر دونوں ممالک کی فوج کے لئے نئی گائیڈ لائن جاری کی گئی تھیں۔
 
فوج کے ذرائع نے این ڈی ٹی وی کو بتایا کہ آئیندہ دونوں طرف سے فوجی دستوں کی طرف سے سرحد پرجارحانہ گشت کرنے سے گریز کیا جائے گا۔ حکومتی ترجمان کے مطابق دو طرفہ تعلقات میں اضافے کے لئے سرحدوں پر امن کو برقرار رکھنا ناگزیر ہے۔ ہندوستان اور چین نے حالات معمول پر لانے کیلئےاتفاق کیا ہے  او
دونوں ممالک سرحد پر کشیدگی کو کم کرنے پر متفق ہوگئے۔
فاروق رشید بٹ
عالمی امن اور اتحاد اسلامی کا پیام بر ، نام فاروق رشید بٹ اور تخلص درویش ہے، سابقہ بینکر ، کالم نویس ، شاعر اور ورڈپریس ویب ماسٹر ہوں ۔ آج کل ہوٹل مینجمنٹ کے پیشہ سے منسلک ہوں ۔۔۔۔۔

تازہ ترین خبریں

کورونا بحران کے باعث ٹی 20 ورلڈ کپ ملتوی کر دیا گیا

انرنیشنل کرکٹ کونسل کی طرف سے یہ حتمی بیان سامنے آ...

ایران میں حکومت کے مخالف صحافیوں کو سخت سزاؤں کا سلسلہ جاری ہے

مغربی اور امریکی میڈیا کے مطابق ایرانی سرکاری عدالت نے وائس...

Comments

Leave a Reply

تازہ ترین خبریں